آؤ کتاب خریدیں (ایک دلچسپ تحریر)

ابسے کچھ دیر قبل برادرِ عزیزاور مشکل وقتوں کے ساتھی جنابِ رازی کا سندیسہ موصول ھوا کہ صحافتی دنیا کے مشہور ستارے اور مروت کے استعارے بھائی فیض اللہ خاں صاحب کی سرگزشت کو چھپے اب کئی دن گزرچکے ہیں اور اولین ایڈیشن ھاتھوں ھاتھ نکلنے کو ھے! سو قبل اسکے کہ کتاب ھاتھوں سے نکل جاوے کچھ تدبیر اسکے حصول کی سوچنی چاھیے! گناہ برسرِ مشیر! پہلا اور ہمارا قومی طریقہ تو وھی ذھن میں مانندِ برق کوندا کہ کچھ لمحوں کیلیے عزتِ نفس کے لبادے کو دھونے کیلیے اتار لیا جاوے! اوراقوامِ عالم میں بھک منگوں کی فہرست میں جب اونچا مقام مل ہی گیا ھے تو اب اَتے جاڑے اور جاتے دسمبر کی طویل راتیں اس پانچسو کے بوسیدہ نوٹ سے کچھ خشک میوہ جات خرید کر عیاشی کرلی جاے! کچھ نہیں تو چھٹانک بھر چہلا چلغوزہ تو اَہی جاوے گا!
دوسرا مشورہ بھائی رازی کا ایساتھا کہ گلوبلای زے شن کا زمانہ ھے پورا یورپ مل گیا ادہر پاک چاینہ اور روس ملکر تجارت کا سوچ رھے ہیں بڑے بڑے اکنامک زون اور کوری ڈور تعمیر ھورھے ہیں سو ایسے میں دو نیم مفلسوں کا ایک نجی معاھدہ کہ جسکی برکت سے سوال کی ذلت سے بھی بچا جاسکے اور کم خرچ بالا نشین کے بمصداق سو پچاس کے خرچہ میں کتاب بھی پڑھ لی جاوے کیوں نا جواینٹ وینچرکا ایڈونچررچالیں؟ کچھ تم ملاو کچھ ھم نکالیں ! اور پہر ڈھونڈنے نکلیں کوئی ایکسکلوزو قسم کی ڈیل!
تفصیل اس اجمال کی یوں کہ ادھر فیس بک پہ پاے جانے والے کئی دوستوں نے کتاب خرید کر پڑھ لی ھوگی! اور لد گیے وہ زمانے کہ جب کتاب بہترین دوست ھواکرتی تھی! ابتو فرنگی بتلاتے ہیں کہ کتا بہترین ساتھی ھے! [خاصکر کہ جب وہ شیرو جیسا وفاشعار ولایتی ھو!] سو سیکنڈ ھینڈ کتاب تلاش لیتے ہیں دوسو کی اَفر رکہینگے مل جاتی ھے تو باری باری استفادہ کرکے واپس ری سیل پہ لگادینگے عین ممکن ھے کہ کچھ بچت ہی ھاتھ اَجاے تو نصف سیر مونگ پہلی بھلا کسکو بہلی نہیں لگتی؟
منصوبہ چونکہ بھاری لاگت کا ھے اور پلاننگ کمیشن کی سفارشات تاحال حتمی منظوری کیلیے پیش نہیں ھوئی ہیں اس لیے مناسب سمجھا گیا کہ نجی نوعیت کے اس معاملہ میں جنتا کی راے بھی لے لی جاے۔خدا معلوم کوئی ایسی بیش قیمت راے ھاتھ لگ جاے کہ کتاب کی قمیت مزید کم ھوکر غربھاے اہلِ کرانچی کی دسترس میں اَجاے بےشک کہ مشورہ میں خیر ہی خیر ھے

تحریر: صہیب نسیم

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں