مقبول پوسٹ

”رعایت اللہ فاروقی” کی 2016 کی سب سے مقبول پوسٹ!

اجتہاد !
::::::::::::::

ایک بار ڈاکٹرز سے مایوس ہو کر پنڈی میں ایک حکیم صاحب کے پاس گیا۔ وہ آنکھیں بند کرکے کافی دیر تک نبض کی سرگوشیاں سنتے رہے اور پھر بولے۔

“علاج ہوجائے گا مگر پرہیز لازم ہے”

“کیسا پرہیز ؟”

“کھانا آدھے پیٹ کھانا ہوگا ؟”

“مطلب ؟”

“اگر آپ دو نان کھاتے ہیں تو ایک کھانا ہوگا اور وہ بھی ایک ماہ تک”

“کوئی مسئلہ ہی نہیں، یہ ہوجائے گا”

دوا لے کر گھر آیا اور علاج بمع پرہیز شروع ہوگیا۔ ایک ماہ بعد حکیم صاحب نے پھر نبض پکڑی تو یکدم چونک گئے۔ ماتھے پر بل ڈال کر فرمایا۔

“آپ سے پرہیز کا کہا تھا 🙁 ”

“جی بالکل !”

“تو آپ نے کیا ؟”

“واللہ کیا !”

“جھوٹی قسم مت اٹھائیں، نبض ساری کہانی بتا رہی ہے”

“حکیم صاحب نبض بکواس بھی تو کر سکتی ہے !”

“نہیں کرتی نبض بکواس ! آپ نے دو دو نان ہی کھائے ہیں”

“حکیم صاحب خدا علیم ہے کہ گزشتہ پورا ماہ میں ایک نان ہی کھاتا رہا ہوں۔ ہاں یہ ہے کہ پہلے دو پاکستانی نان کھاتا تھا، جب آپ نے ایک نان کا کہا تو میں نے پاکستانی کے بجائے قندھاری نان شروع کر لیا مگر بخدا کھایا ایک ہی ہے 🙁 ”

حکیم جی نے ماتھے پر ہاتھ مارا اور بے ساختہ پوچھا۔

“کرتے کیا ہیں آپ ؟”

“جی کرتا تو صحافت ہوں لیکن آج کل غامدی صاحب سے متاثر ہو کر “اجتہاد” کا شوق بھی پورا کرنے لگا ہوں !”

“اٹھیئے ! فوراََ اٹھیئے ! جو وہ شریعت کے ساتھ کر رہے ہیں وہی آپ اپنے معدے کے ساتھ کر چکے، نکلئے میرے مطب سے ! ! ! !”

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں